جدید شہری کچی بستیاں…صائمہ احمد ،جامعہ کراچی

میرا آج کا موضوع ہے جدید شہر کی کچی ، بستیاں، پاکستان کا شمار تیسرے درجے کے ترقی پذیر ممالک میں ہوتا ہے ۔ لیکن پھر بھی پاکستان کے معاشی اور روشنیوں کے شہر کراچی کا شمار دنیا کے 7 بڑے شہروں میں ہوتا ہے جہاں دو ر جدید کی تقریباً   سہولت  (خوبصورت پارکس بڑی عمارتیں ، شاپنگ پلازہ وغیرہ) موجود ہیں لیکن اس کے ساتھ ہی کراچی کا ایک دوسرا پیکو بھی ہے جو کچی بستیوں اور ان میں رہنے والے غریب عوام پر مشتمل ہے ۔ کراچی میں قائم کچی بستیوں اور ان میں رہنے والے غریب عوام پر مشتمل ہے کراچی میں قائم میں قائم کچی بستیوں ، ٹوٹی پھوٹی سڑکوں ، سیوریج کی ٹوٹی لائنوں اور بھوکے غریب پر نظر ڈالیں تو اندازہ ہوگا کہ اس دنیا کے ساتویں بڑے شہر کا حال بہت ہی برا ہے  شہر کراچی صرف نام بڑا نہیں بلکہ رقبے کے لحاظ سے 3.527 مربع کلو میٹر پر واقع ہے جس کی آبادی کا ایک بڑا حصہ غربت کی زندگی گزار رہا ہے یہاں بسنے والے لوگ پاکستان کے ہر کونے سے تعلق رکھتے ہیں اندرون شہروں سے روزی کو تلاش میں آئے افراد بے گھر ہونے کے باعث جہاں خالی جگہ دیکھتے ہیں ڈیرہ ڈال کہتے ہیں اور یہ سلسلہ برسوں سے جاری ہے جس کی وجہ  سے خوبصورت شہر کراچی کا نقشہ بگڑ کر رہ گیا  ہے اور جگہ  جگہ کچی بستیاں قائم ہوگئیں  جو شہر کی خوبصورتی ، ہر بدنما داغ کی طرح نظر آتی ہیں باقاعدہ قانونی کاغذات نہ ہونے کی بنا ء پر ان گھروں کا اندراج نہیں ہوپاتا  جس کی وجہ  سے ان میں رہنے والے لوگ حکومت کی دی گئی بہت سی  سہولیات سے محروم رہتے ہیں جبکہ ان جگہوں پر اکثر بھی اور گبس چوری ہونے کی شکایت بھی وصول ہوتی ہیں میری انتظامیہ سے گزارش ہے کہ شہرمیں قائم ان کچی بستیوں  کا نوٹس لیا جائے یا تو ان میں رہنے والے لوگوں کو کوئی مستقل ٹھکانہ فراہم کیا جائے جس کا قانونی طور پر باقاعدہ اندراج کیا جائے یا پھر ان میں سالوں سے رہائش پذیر  افراد کو اس خوف سے نجات مل جائے انہیں کوئی بھی کسی بھی وقت گھر سے نکال دے گا۔ 

صائمہ احمد ، جامعہ کراچی 

شعبہ ابلاغ عامہ 

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s