کم عمری میں شادی، تحریرصائمہ احمد، جامعہ کراچی

کم عمری میں شادی

ہمارے معاشرے میں کم عمری کی شادیاں خاص طور پر گاؤں دیہات اور کچی آبادیوں میں عام پائی جاتیں ہیں معاشرے میں ایک عمر لڑکی کی شادی کردی جاتی ہے جو عمر اس کے کھیلنے کی ہوتی ہے  ایک لڑکی میٹرک کے بعد شاد ی کردی جاتی ہے اور اس وجہ سے وہ تعلیم کی کمی وجہ سے کم عمر لڑکی نہ سمجھ ہونے کی وجہ ےس اپنی ازدواجی زندگی  کی ذمہ داری سے نا آشنا ہوتی ہے جس کی وجہ سے اس لڑکی کی ازدواجی زندگی میں بہت سے مشکلات درپیش آنے لگتی ہے اور نوبت طلاق تک پہنچ جاتی ہے میں روزنامہ اُمّت کے توسط سے عوام اور حکومت سے گزارش ہے کہ اس مسئلے کو سنجیدگی سے لیں اور ایک معاشرے کی بہتری کے لئے اپنا مثبت کردار ادا کریں ۔ 
صائمہ احمد ، جامعہ کراچی 

شعبہ ابلاغ عامہ

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s